Urdu News

Twitter icon
Facebook icon
Google icon
StumbleUpon icon
Reddit icon
Tue
21
Feb

سکیورٹی وجوہات کی بنا پر تہران پر ڈرون اڑانے کے لیے لائسنس لینا لازم

ایرانی حکام نے سکیورٹی وجوہات کی بنا پر چند ہفتوں میں ڈرونز پر فائرنگ کے کم از کم دو واقعات کے بعد تہران پر نجی ڈرونز کی پرواز پر پابندی عائد کر دی ہے۔
ایران کے فوجی حکام کا کہنا ہے کہ ڈرونز اڑانے کے لائسنس افراد کو نہیں متعلقہ تنظیموں کو دیے جائیں گے۔
حکام کا کہنا ہے کہ حساس تنصیبات کی جانب پرواز کرنے والے ڈرونز کی وجہ سے سکیورٹی الرٹ جاری کیے گئے۔
تہران میں ڈرونز کی مقبولیت میں اضافہ ہوا ہے لیکن مقامی افراد ان سے کافی نالاں ہیں۔
پاسداران انقلاب کے ڈپٹی کمانڈر علی رضا کا کہنا ہے 'ڈرونز پر کیمرے نصب ہوتے ہیں اور حساس مقامات پر پرواز کرتے ہیں، فلم بنائی جاتی ہے اور اس سے دشمنوں کو فائدہ ہو سکتا ہے۔اور یہ ڈرونز سکیورٹی کے لیے خطرہ ہیں۔'

Tue
21
Feb

'دولت اسلامیہ کی شکست کے لیے بدعنوانی کا خاتمہ ضروری'

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ دولتِ اسلامیہ کو شکست دینا اس وقت تک ممکن نہیں جب تک بدعنوانی کے اس ماحول کو ختم نہیں کیا جاتا جو اس شدت پسند تنظیم کو پھلنے پھولنے میں مدد دے رہا ہے۔
ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل امریکہ اور برطانیہ سمیت مغربی ممالک کی حکومتوں پر دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بدعنوانی کو نظر انداز کرنے کا الزام عائد کرتی رہی ہے۔
ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی اس رپورٹ میں ان ممالک سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ فوجی بجٹ میں جوابدہی کو سختی کے ساتھ لاگو کرنے کی کوشش کریں۔
رپورٹ کے مطابق بدعنوانی اور اس سے پیدا ہونے والے حالات لوگوں کو دہشت گردی کی جانب لے جاتے ہیں اور اس کے فروغ میں تعاون کرتے ہیں۔
یہ رپورٹ ایسے وقت میں جاری کی گئی ہے جب عراقی افواج دولت اسلامیہ کے مضبوط گڑھ موصل کو واپس لینے کے لیے پیش قدمی کر رہی ہیں۔

Tue
21
Feb

آسٹریلیا: طیارہ حادثے میں پانچ افراد ہلاک

آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں ایک طیارہ حادثے کا شکار ہوکر شاپنگ سینٹر پر جا گرا جس کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔
وکٹوریہ پولیس کے نائب کمشنر سٹیفن لین نے بتایا کہ اس چارٹر طیارے میں چھوٹے ایئرپورٹ ایسنڈون سے اڑنے کے فورا بعد بظاہر 'تباہ کن خرابی پیدا ہو گئی۔'
یہ طیارہ مقامی وقت کے مطابق منگل کو صبح نو بجے حادثے کا شکار ہوا
طیارے میں سوار تمام افراد کی ہلاکت کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔
نائب کمشنر نے کہا: 'ابھی صرف اتنی اطلاعات ہیں کہ جہاز میں سوار افراد کے علاوہ کوئي اور ہلاک نہیں ہوا ہے۔

Tue
21
Feb

جنرل مک ماسٹر قومی سلامتی کے مشیر نامزد

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے لیفٹیننٹ جنرل ایچ آر مک ماسٹر کو قومی سلامتی کے مشیر کے عہدے کے لیے نامزد کیا ہے۔
مک ماسٹر لیفٹیننٹ جنرل مائیکل فلن کی جگہ قومی سلامتی کے مشیرکا عہدہ سنبھالیں گے جن کو ٹرمپ نے عہدہ سنبھالنے کے 24 روز بعد ہی برخاست کردیا تھا۔
امریکی فوج کے لیفٹیننٹ جنرل ایچ آر مک ماسٹر عراق اور افغانستان میں حکومت کی انسداد بدعنوانی کی مہم کے سربراہ رہے ہیں۔
یاد رہے کہ امریکی صدر کی قومی سلامتی کے مشیر کے لیے پہلا انتخاب ریٹائرڈ وائس ایڈمرل رابرٹ ہارورڈ نے 'ذاتی وجوہات' کے باعث پیشکش رد کردی تھی۔
فلوریڈا میں لیفٹیننٹ جنرل ایچ آر مک ماسٹر کی نامزدگی کا اعلان کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ مک ماسٹر نہایت تجربہ کار اور قابل ہیں۔ ان کو امریکی فوج میں بہت عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔

Tue
21
Feb

سویڈن سے متعلق بیان پر ٹرمپ سے وضاحت طلب

سٹاک ہوم نے فلوریڈا ریلی کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ کے اس بیان کی وضاحت طلب کی ہے جس میں انھوں نے سویڈن میں ہونے والے کسی سکیورٹی واقعے کا ذکر کیا تھا۔
سویڈش حکام کا کہنا ہے کہ جمے کے روز ان کے ملک میں کسی قسم کا کوئی واقعہ رونما نہیں ہوا۔ اسی لیے امریکی انتظامیہ سے کہا گیا ہے کہ وہ صدر ٹرمپ کے بیان کی وضاحت کریں کہ وہ کس واقعے کی جانب اشارہ کر رہے تھے۔
یاد رہے کہ صدر ٹرمپ نے ہفتے کو ریاست فلوریڈا میں اپنے حامیوں کی ایک ریلی سے خطاب میں یورپ میں ہونے والے دہشتگرد حملوں کی فہرست بیان کرتے ہوئے سویڈن کا ذکر بھی کیا تھا اور کہا تھا کہ ’دیکھئیے گذشتہ رات سویڈن میں کیا ہوا۔ ‘
صدر ٹرمپ نے بعد میں اپنی ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ تقریر کے دوران انھوں نے امریکی ٹی وی چینل فوکس نیوز کی رپورٹ کا حوالہ دیا جوسویڈن میں پناہ گزینوں اور جرائم سے متعلق تھی۔ تاہم انھوں نے رپورٹ کے نشر ہونے کا وقت نہیں بتایا۔

Tue
21
Feb

ہٹلر کا فون دو لاکھ 43 ہزار ڈالر میں فروخت

جرمنی کے سابق رہنما اڈولف ہٹلر نے دوسری جنگ عظیم کے دوران جس ٹیلیفون کا استعمال کیا تھا اسے امریکہ میں دو لاکھ 43 ہزار امریکی ڈالر میں خرید لیا گیا ہے۔
فون خریدنے والے شخص کی شناخت ظاہر نہیں کی کئی ہے۔
اتوار کو امریکی ریاست میری لینڈ میں اس فون کی بولی لگائی گئی۔ منتظمین نے ابتدائی بولی ایک لاکھ امریکی ڈالر رکھی تھی۔
لال رنگ کے اس فون پر جرمن رہنما ہٹلر کا نام کندہ ہے اور یہ برلن کے ایک بنکر سے سنہ 1945 میں برآمد ہوا تھا۔
سویت فوجیوں نے جرمنی کے ہتھیار ڈالنے کے بعد برطانوی بریگیڈیئر سر راف رینر کو یادگار کے طور پر یہ فون تحفے میں دیا تھا۔

Tue
21
Feb

24 گھنٹوں میں 27 بار دل کا دورہ لیکن پھر بھی زندہ

کئی بار ایسے معجزات بھی ہوتے ہیں کہ ان پر یقین کرنا مشکل ہوجاتا ہے۔ ایسا ہی ایک معجزہ برطانیہ میں دیکھنے کو ملا جس پر شاید آپ کو حیرت ہو۔
برطانوی شہری رے وؤڈ ہال کو 24 گھنٹے کے اندر تقریبا 27 بار ہارٹ اٹیک ہوا لیکن ڈاکٹروں کی مستعدی اور وقت پر علاج ہونے کی وجہ سے ان کی جان بچ گئی۔
وؤریسٹرشائر میں رہنے والے 54 برس کے وؤڈ ہال ’واكنگ فٹبال‘ کھیل رہے تھے۔ برطانیہ میں بڑھتی عمر کے لوگوں کے لیے سست رفتار انداز میں ایک کھیل کھیلا جاتا ہے جسے واکنگ فٹبال کہتے ہیں۔
کھیل کے دوران ہی اچانک انہیں دل کا دورہ پڑا اور وہ وہیں گر گئے۔ ان کے ساتھیوں نے نیشنل ہیلتھ سروس کی ہیلپ لائن میں اس کی اطلاع دی۔
انہیں وؤریسٹرشائر رائل ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں کو فوری طور پر ان کی آرٹیری میں دو سٹینٹ لگانے پڑے۔

Fri
17
Feb

نائن الیون کے بعد افغانستان میں مزاحمتی شاعری

افغانستان میں 1989 کے انقلابِ ثور کے بعد ایسی خانہ جنگی شروع ہوئی جس کے شعلے اب بھی لپک رہے ہیں۔ اس کا اثر افغان شاعری پر بھی ہوا۔ خاص طور پر نائن الیون کے بعد امریکی یلغار اور طالبان حکومت کے خاتمے کے بعد پشتو میں مزاحمتی شاعری کو بہت زیادہ پذیرائی ملی۔
ابتلا کے اس دور میں شعرا کے ایک بڑے طبقے نے لب و رخسار اور گل و بلبل کے بجائے ملک میں سیاسی اور جنگی دنگل سے براہِ راست متاثر ہونے والے نِہتّے عوام کے مسائل کو اپنا موضوع بنایا۔
اس طرح پشتو ادب میں ایک لمبے عرصے بعد مزاحمتی شاعری کو پھر سے فروغ اور عوامی پذیرائی ملی۔
اس مزاحمتی روایت کے علمبردار اور معروف افغان شاعر مطیع اللہ تراب کا کہنا ہے کہ وہ کسی پر تنقید نہیں کرنا چاہتے۔ مگر ان کے خیال میں جنگ و جدل کے دور میں رومان اور رومانوی شاعری کوئی معنی نہیں رکھتی۔
’رومان تو اس وقت لکھا جاتا ہے جب امن ہو۔ جب روٹی، کپڑا اور مکان کی فکر نہ ہو۔ جنگ و جدل نہ ہو۔ میرے خیال میں شعر وہ ہے جس میں کسی بے کس اور مجبور کے احساسات کو زبان ملے۔‘

Fri
17
Feb

بریگزٹ کے خلاف اٹھ کھڑے ہونے کا وقت آ گیا: ٹونی بلیئر

ٹونی بلیئر نے برطانوی عوام کو یورپی یونین سے علیحدگی کے معاملے پر ذہن تبدیل کرنے کے لیے مائل کرنے کو اپنا مشن قرار دیا ہے۔
سابق وزیرِ اعظم نے تقریر کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں نے ریفرینڈم میں 'بریگزٹ کی شرائط کے بارے میں معلومات کے بغیر' ووٹ دیا تھا۔
انھوں نے کہا کہ وہ ’کھائی میں گرنے سے بچنے کا راستہ ڈھونڈنے کے لیے حمایت اکٹھی کر رہے ہیں۔'
تاہم سابق وزیر ڈنکن سمتھ نے کہا کہ بلیئر کا بیان متکبرانہ اور غیرجمہوری ہے جبکہ ایوانِ وزیرِ اعظم نے کہا ہے کہ وہ بریگزٹ پر عمل درآمد کے لیے پرعزم ہے۔
وزیرِ اعظم ٹریزا مے مارچ کے اختتام تک بریگزٹ کے بارے میں مذاکرات شروع کرنے والی ہیں۔ گذشتہ ہفتے دارالعوام نے اس اقدام کی حمایت کی تھی۔

Fri
17
Feb

وائس ایڈمرل (ر) ہارورڈ کا ٹرمپ کا مشیر برائے قومی سلامتی بننے سے انکار

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے قومی سلامتی کے مشیر کے لیے چنے گئے ریٹائرڈ وائس ایڈمرل رابرٹ ہارورڈ نے یہ عہدہ سنبھالنے سے انکار کر دیا ہے۔
یاد رہے کہ چند روز قبل ہی جنرل مائیکل فلن کو صدر ٹرمپ کی حلف برداری سے قبل روسی سفیر کے ساتھ بات چیت کے دوران روس کے خلاف امریکی پابندیوں کو زیرِ بحث لانے کے الزامات کے بعد یہ عہدہ چھوڑنا پڑا تھا۔
مائیکل فلن کے پیر کے روز قومی سلامتی کے مشیر کا عہدہ چھوڑنے کے بعد عام تاثر یہی تھا کہ صدر ٹرمپ نے ریٹائرڈ وائس ایڈمرل روبرٹ ہارورڈ کو ان کی جگہ لینے کے لیے چنا ہے۔
امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق 60 سالہ ایڈمرل ہارورڈ اور ٹرمپ انتظامیہ کے درمیان وجۂ تنازع یہ بات بنی کہ وہ اس عہدے کے ماتحت کام کرنے کے لیے اپنی ٹیم لانا چاہتے تھے۔
وائٹ ہاؤس کے ایک اہلکار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ہے کہ ایڈمرل ہارورڈ نے ذاتی وجوہات کی بنیاد پر انتظامیہ کو بتا دیا ہے کہ وہ یہ عہدہ نہیں سنبھال سکتے۔

Fri
17
Feb

سپین: 64 سالہ خاتون کے جڑواں بچوں کی پیدائش

شمالی سپین میں ایک 64 سالہ خاتون کے گھر دو صحت مند جڑواں بچے پیدا ہوئے ہیں۔
شمالی سپین کے شہر بؤئرگوس کے ایک ہسپتال میں خاتون نے سیزیریئن آپریشن کے ذریعے ایک لڑکے اور ایک لڑکی کو جنم دیا۔ ایسے نایاب کیسز میں عموماً سیزیریئن آپریشن استعمال کیا جاتا ہے۔
بچوں کو جنم دینے والی خاتون کا نام ظاہر نہیں کیا گیا ہے تاہم ہسپانوی میڈیا کے مطابق انھوں نے امریکہ میں فرٹیلیٹی ٹریٹمنٹ کروائے تھے۔
2012 میں اسی خاتون نے ایک لڑکی کو بھی جنم دیا تھا جیسے بعد میں حکام نے اس کی نشو نما کے حوالے سے خدشات کے پیشِ نظر، اپنے قبضے میں لے کر سوشل سروسز کے حوالے کر دیا تھا۔ حکام کا کہنا تھا کہ بچی کو تنہائی میں بہت مشکل حالات میں پالا جا رہا تھا جیسے کہ مناسب لباس کی عدم موجودگی اور صفائی کا ناقص نظام۔
اس خاتون کے جڑواں بچوں کے بارے میں ابھی تک حکام نے کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق دونوں بچے بالکل صحت مند ہیں۔ لڑکے کا وزن 2.4 کلوگرام اور لڑکی کا 2.2 کلوگرام ہے۔

Fri
17
Feb

عراق: بغداد میں تیسرے دن میں تیسرا دھماکہ، 48 ہلاک

عراق کے دارالحکومت بغداد میں سکیورٹی اور طبی ذرائع کے مطابق تین دن میں ہونے والے تیسرے بم دھماکے میں کم از کم 48 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔
یہ دھماکہ جمعرات کو شہر کے جنوبی علاقے بعیا میں ہوا جہاں دھماکہ خیز مواد سے بھری کار نے عوام کو نشانہ بنایا۔
اس دھماکے میں 50 سے زیادہ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔
اس سے قبل بدھ کی شام بغداد کے ایک شیعہ اکثریتی مضافاتی علاقے میں ہونے والے دھماکے میں کم از کم 18 افراد ہلاک ہوئے تھے۔
صدر سٹی نامی علاقے کی مصروف مرکزی شاہراہ میں ایک پک اپ ٹرک کے ذریعے خودکش حملہ آور نے خود کو اڑا لیا جس میں 42 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔
2017 کے ابتدائی چند روز میں بغداد میں خودکش حملوں میں اضافہ دیکھا گیا تھا تاہم حالیہ چند دنوں میں ان واقعات میں کمی ہوئی ہے۔
اس حملہ کی اب تک کسی گروہ یا تنظیم نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے تاہم ماضی میں شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے اس سے ملتی جلتے حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

Fri
17
Feb

اقوام متحدہ کی ٹرمپ کو تنبیہ،’ فلسطین اسرائیل تنازعے کا کوئی دوسرا حل نہیں‘

اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے اسرائیل اور فلسطین کے تنازعے کے دو ریاستی حل کو ترک کرنے کے حوالے سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’اس کا کوئی دوسرا حل نہیں ہے۔‘
یہ بات صدر ٹرمپ کے اس بیان کے بعد کہی گئی ہے جس میں انھوں نے امریکہ کی 10 سالہ پالیسی کا یہ کہتے ہوئے مخالفت کی کہ وہ امن کی طرف جانے والے راستے کا ساتھ دیں گے خواہ وہ کوئی بھی ہو۔
اسرائیل اور فلسطین کے درمیان امن مذاکرات 2014 میں منقطع ہوئے تھے۔
اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گتریز نے عالمی برادری سے کہا کہ وہ دو ریاستی حل کے لیے ہم ممکن اقدامات اٹھائیں۔
انھوں نے کہا کہ اس تنازعے کا کوئی دوسرا حل نہیں ہے۔

Fri
17
Feb

سائنسدانوں کی اپیل، ’اپنا دماغ عطیہ کریں‘

سائنسدان تحقیق کے لیے لوگوں سے مرنے کے بعد اپنے دماغوں کو عطیہ کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔
ان کے مطابق ان کے پاس ڈپریشن اور پوسٹ ٹرامیٹک سٹریس والے دماغوں کی کمی ہے۔
سائنسدانوں کی تحقیق کا مقصد ذہنی اور دماغی خرابی کے لیے نیا طریقۂ علاج دریافت کرنا ہے۔
سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ انسانی دماغ پیچیدہ اور خوبصورت ہوتا ہے اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اس میں تبدیلی رونما ہوتی ہے۔
محقیقین نے حالیہ برسوں کے دوران دماغ کی ساخت اور دماغی خرابی کے درمیان تعلق بنایا ہے۔
بوسٹن کے مضافات میں ہارورڈ برین ٹشو ریسورس سینٹر میں تین ہزار سے زائد دماغوں کو اکھٹا کیا گیا ہے۔ یہ دنیا میں سب سے بڑے دماغ کے بینکوں میں سے ایک ہے۔ ان دماغوں کے متعدد نمونے ذہنی یا اعصابی خرابی والے لوگوں کے ہیں۔

Thu
16
Feb

سنکیانگ: چاقو سے مسلح افراد کے حملے میں پانچ ہلاک

چین کے مسلم اکثریتی خطے سنکیانگ میں چاقو سے مسلح حملہ آوروں نے پانچ افراد کو ہلاک اور پانچ کو زخمی کر دیا ہے۔
مقامی حکومت کے مطابق یہ واقعہ منگل کو پشان کاؤنٹی میں پیش آیا اور پولیس نے تینوں حملہ آوروں کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔
مقامی حکومت کی ویب سائٹ پر شائع کیے گئے ایک بیان میں حملہ آوروں کو 'بدمعاش' قرار دیا گیا ہے۔
بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ حملے کے چند منٹ بعد پولیس جائے وقوعہ پر پہنچ گئی تھی اور اس معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔
تاحال اس حملے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی اور نہ ہی کسی گروہ نے اس کی ذمہ داری قبول کی ہے۔
چینی حکومت ماضی میں مسلم علیحدگی پسندوں کو ایسے حملوں کے لیے ذمہ دار ٹھہراتی رہی ہے۔

Pages

Subscribe to RSS - Urdu News